F-16 معاہدے پر ترک امریکہ مذاکرات اچھے جا رہے ہیں،ترک وزیر خارجہ

ترک وزیر خارجہ کا کہنا ہے کہ ترکیہ امریکہ تعلقات میں درپیش چیلنجز کے باوجود امریکہ کے ساتھ ایف 16 لڑاکا طیاروں کے معاہدے پر بات چیت اچھی جا رہی ہے۔

ترک وزیر خارجہ ملیوت چاوش اولو نے یہ بات میڈیا کو انٹرویو دیتے ہوئے کہی۔

دونوں ممالک کے درمیان موجودہ مسائل جیسے کہ دہشت گرد گروپ YPG/PKK کے لیے امریکی حمایت، پابندیاں، اور فتح اللہ دہشت گرد تنظیم (FETO) کے سرغنہ کی حوالگی، جو کہ 2016 کی شکست خوردہ بغاوت کے پیچھے کارفرما ہے، کو حل کرنے میں مدد کرنے کے لیے، تر ک وزیر خارجہ  نے کہا ہے کہ "اسٹریٹجک میکانزم” قائم کیا گیا ہے اور وزارتی سطح پر پہلی میٹنگ نیویارک میں پہلے ہی ہو چکی ہے۔

وزیر خارجہ نے اس بات پر بھی زور دیا ہے  کہ حالیہ برسوں میں امریکی کانگریس میں نظر آنے والا منفی ماحول اب  ختم ہو گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ (دو طرفہ) تعاون نیٹو کے لیے بھی تزویراتی اہمیت کا حامل ہے کیونکہ دونوں ممالک کئی دہائیوں سے اتحاد کے رکن ہیں۔

شمالی شام میں دہشت گرد گروہوں کے خلاف ممکنہ نئی کارروائی کے بارے میں پوچھے جانے پر، وزیر خارجہ نے کہا کہ تیاریاں جاری ہیں اور یہ کہ "اچانک اقدام آئے گا”، صدر رجب طیب ایردوان کے انتباہ کی بازگشت ہے کہ اس طرح کی کارروائی غیر متوقع طور پر سامنے آئے گی۔

یونان کے ساتھ تعلقات پر انہوں نے شکایت کی کہ ایتھنز بین الاقوامی قانون کے منافی اور بنیادی انسانی حقوق کی خلاف ورزی کرتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یونان کی ترک مسلم اقلیت کے حقوق کی پامالی کی وجہ سے، اس کا انسانی حقوق کے معاملے پر کوئی کہنا نہیں ہے۔

وزیر خارجہ  نے اس بات پر بھی زور دیا کہ یونان دہشت گردی کے مشتبہ افراد کی میزبانی کرتا ہے اور اپنے علاقوں میں PKK کے دہشت گردوں کو پناہ دیتا ہے۔

 

Read Previous

بھارتی ریاست بہار میں آسمانی بجلی گرنے سے 20 افراد ہلاک ہوگئے

Read Next

ترکیہ ہمیشہ سب سے زیادہ خیراتی ملک رہا ہے،ترک مذہبی امور

Leave a Reply