ترک اور یوکرائنی صدور کے درمیان ٹیلیفونک رابطہ، یوکرین جنگ پر تبادلہ خیال

ترک اور یوکرینی رہنماوں کے درمیان ٹیلوفونک رابطہ ، دونوں رہنماوں نے روس یوکرین جنگ پر تبادلہ خیال کیا۔

ترکیہ کے کمیونیکیشن ڈائریکٹوریٹ کے ایک بیان کے مطابق، ترک صدر رجب طیب ایردوان نے اپنے یوکرائنی ہم منصب ولادیمیر زیلینسکی کو بتایا کہ یوکرین کے زپوریزہیا جوہری پلانٹ پر ایک معاہدہ ترکیہ کی ثالثی کے ذریعے کیف اور ماسکو کے درمیان طے پا سکتا ہے، بالکل اسی طرح جیسے استنبول کے اناج کے معاہدے میں ترکیہ نے ثالثی کی تھی۔

صدر ایردوان نے گزشتہ ہفتے یوکرین اور روس کے درمیان کامیاب قیدیوں کے تبادلے پر بھی خوشی کا اظہار کیا۔

ترک رہنما نے انقرہ کی جانب سے روس اور یوکرائن کی جنگ کو پرامن طریقوں سے ختم کرنے میں مدد کے لیے کوئی بھی قدم اٹھانے پر آمادگی کا اعادہ کیا اور کہا کہ روس کے زیر کنٹرول یوکرائنی علاقوں میں ہونے والے ریفرنڈم سے ایسی سفارتی کوششوں کو نقصان پہنچے گا۔

یوکرین کے علیحدگی پسند علاقوں ڈونیٹسک اور لوہانسک اور روس کے زیر کنٹرول علاقوں زپوریزہیا اور کھیرسن میں 23-27 ستمبر کو روس میں شامل ہونے کے لیے ریفرنڈم ہوئے۔

بین الاقوامی برادری کی طرف سے ان انتخابات کی بڑے پیمانے پر مذمت کی گئی ہے، یورپی ممالک اور امریکہ نے انہیں "شیم” قرار دیا ہے اور کہا ہے کہ انہیں تسلیم نہیں کیا جائے گا۔

Read Previous

ترک ڈیزاسٹر اینڈ ایمرجنسی منیجمنٹ کے صدر یونس سیزر کا دورہ پاکستان، سیلاب کی صورتحال کا جائزہ

Read Next

پانچواں ٹی20: پاکستان نے انگلینڈ کو 6 رنز سے شکست دے دی

Leave a Reply