سات ارب انسانوں کی قسمت پانچ ممالک کی سیکیورٹی کونسل پر نہیں چھوڑی جا سکتی، صدر ایردوان کا جنرل اسمبلی سے خطاب

صدر رجب طیب ایردوان نے کہا ہے کہ اقوام متحدہ کی سیکیورٹی کونسل میں اصلاحات وقت کی اہم ترین ضرورت ہے کیونکہ سات ارب انسانوں کی قسمت کو پانچ ممالک پر نہیں چھوڑا جا سکتا۔

اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی سے اپنے ویڈیو لنک خطاب میں انہوں نے کہا کہ یہ دنیا کے مسائل کے حل کا  ایک منصفانہ اور دیرپا حل نہیں ہے۔ ایک ایسی کونسل کی ضرورت ہے جو جمہوری، شفاف اور قابل احتساب ہو۔

یہ کونسل موٗثر ہو اور اس کی اشد ضرورت ہے یہی انسانیت کی ترجیح ہے

میرا یقین ہے کہ اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کو مزید طاقت ور اور از سر نو منظم کر کے دنیا اپنے مسائل کے حل میں اہم کردار ادا کر سکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ بحیثیت انسان ہم کو اس وقت بے شمار چیلنجز کا سامنا ہے جن میں صحت، معیشت، سماجی امن اور مستقبل اور سب سے اہم کورونا وائرس کی عالمی وبا شامل ہے۔

صدر ایردوان نے کہا کہ ہم تمام انسان دنیا بھر میں ایسے 17 کروڑ لوگوں کو دیکھ رہے ہیں جنہیں دنیا میں مدد اور حفاظت کی اشد ترین ضرورت ہے۔ دنیا میں بھوک کے شکار افراد کی تعداد 82 کروڑ سے تجاوز کر گئی ہے۔

7 کروڑ لوگ کو اپنا گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہو گئے کیونکہ انہیں تنازعات اور ظلم کا شکار بنایا گیا۔ بدقسمتی سے کورونا وائرس نے ان حالات کو مزید بدتر بنا دیا۔

انہوں نے کہا کہ دنیا بھر میں ناانصافی اور عدم مساوات بڑھ گئی ہے۔ ایک فراخدلانہ ملک کی حیثیت سے جو ہم سے ہو سکا ہم نے اپنے دستیاب وسائل سے ترکی کی جی ڈی پی سے سب سے زیادہ امداد مختلف ممالک کو دی۔ اس موقع پر ترکی نے اپنے شہریوں کا بھی خاص خیال رکھا۔ ہم نے 146 ممالک کو طبی آلات اور امدادی سامان بھی بھیجا۔ امداد دینے میں ترکی نے کسی کے مذہب، زبان، نسل اور براعظم کو اہمیت نہیں دی۔

صدر ایردوان نے کہا کہ لالچی، انا پرست، طاقت کے ذریعے استحصال کرنے والوں اور نوآبادیاتی نظام کی خواہش رکھنے والوں نے ظلم کے نئے طریقے استعمال کئے۔ ان کی وجہ سے عالمی نظام میں انصاف کی فراہمی سب سے بڑی رکاوٹ رہی

انہوں نے کہا کہ دنیا کے مختلف حصوں میں استحکام حاصل کرنے میں ناکامی خاص طور پر شام، فلسطین، یمن اور افغانستان اس میں خاص طور پر شامل ہیں۔ اقوام متحدہ کے نظام کو خاص طور پر اس کے لئے بنایا گیا تھا لیکن اقوام متحدہ تنازعات کو دیگر مسائل کو حل کرنے میں ناکام رہا

ہم سب محسوس کر رہے ہیں کہ آج ہم ان مسائل پر قابو پا نہیں سکتے۔

گذشتہ صدی میں جو استحصالی نظام خاص طور پر بنایا گیا تھا

انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ کو دوبارہ با اختیار بنانے کے لئے سب سے پہلے سیکیورٹی کونسل میں اصلاحات لانے کی ضرورت ہے۔

Read Previous

اسرائیل نے دوسرے روز بھی مسجد ابراہیم بند کر دی

Read Next

کل تک جو ترکی کو نظر انداز کرتے تھے آج مذاکرات کی بھیک مانگ رہے ہیں، صدر ایردوان

Leave a Reply