ترکیہ اور پاکستان کے درمیان تجارت کے وسیع مواقع موجود ہیں، پاکستانی وزیراعظم

وزیراعظم پاکستان شہباز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان اورترکیہ کے درمیان تجارت اور سرمایہ کاری بڑھانے کے وسیع مواقع موجود ہیں، مصنوعات کی تجارت کے معاہدے سے دونوں ممالک کے لئے نئی راہیں کھلیں گی، دوطرفہ تجارت کے فروغ کے لئے معاہدے پر پوری طرح عملدرآمد کو یقینی بنایا جائے گا۔ انہوں نے ان خیالات کااظہار پاکستان اور ترکیہ کےدرمیان تجارتی معاہدے پردستخط کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔معاہدے پر وفاقی وزیر تجارت سیدنوید قمر اور ترکیہ کے وزیرتجارت مہمت مش نے دستخط کئے

تقریب میں وفاقی وزیر خزانہ مفتاح اسماعیل ، وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات مریم اورنگزیب ، وفاقی وزیر ماحولیاتی تبدیلی شیری رحمن، وفاقی وزیر سرمایہ کاری بورڈ چوہدر ی سالک حسین اور اعلیٰ سرکاری افسران بھی موجود تھے۔

وزیراعظم نے کہاکہ پاکستان اور ترکیہ کے تاریخی برادرانہ تعلقات میں یہ معاہدہ ایک سنگ میل کی حیثیت رکھتا ہے۔ دنوں ممالک کےدرمیان تجارتی معاہدہ خوش آئند ہے۔ اس پر کئی سالوں بات چیت ہو رہی ہے ۔مئی میں ہمارے ترکیہ کے دورےکے بعد پاکستان اور ترکی کی طرف سے معاہدے کے لئے کوششوں کو تیز کیاگیا ۔

ترکیہ کےصدر رجب طیب ایردوان کی مثالی قیادت میں ترکیہ کے وزیر تجارت مہمت مش اور پاکستان کے وزیرتجارت سید نوید قمر اوردونوں ممالک کےسفرا اور دیگر حکام نے بہت محنت کی ہے جس کے بعد یہ معاہدے طے پایاہے۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان اور ترکیہ کے درمیان تجارت کے فروغ کی وسیع گنجائش اور صلاحیت موجود ہے اور تجارت کے فروغ کے لئے ہم بھرپور عزم رکھتے ہیں۔

اس معاہدے سے دونوں ممالک کے تعلقات کو مستحکم بنانے کے لئے نئی راہیں کھلیں گی اور تجارت و سرمایہ کاری بڑھانے میں مدد ملے گی۔ ہمیں اس معاہدے پر پوری طرح عملدرآمد کو یقینی بنانا ہے۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیرتجارت سیدنوید قمر نے کہا کہ پاکستان اور ترکیہ کے درمیان معاہدے کے تحت دونوں ممالک اپنی اپنی مصنوعات کی تجارت کرسکیں گے اور اس سے دونوں ممالک کی معیشت مستحکم ہو گی۔ پاکستان اور ترکیہ نے تجارت کے لئے مختلف اشیا ءپر ایک دوسرے کو رعایت دی ہے۔

ہم اپنی دوطرفہ تجارت کاحجم 5 ارب ڈالر تک بڑھانے کے خواہاں ہیں ۔اس معاہدے سے ہمیں اپناہدف حاصل کرنے میں مدد ملے گی اور دونوں ممالک کے کاروباری طبقات بھی اس سے مستفیدہوسکیں گے۔ ترکیہ کے وزیر تجارت مہمت مش نے کہاکہ پاکستان اور ترکی کو طویل عرصہ سے مشترکہ تجارت کے فروغ کے اس معاہدے کی ضرورت تھی ۔

مئی میں وزیراعظم شہباز شریف کے ترکیہ کےدورے کے دوران اس پر کام تیزکرنے پر اتفاق کیاگیا۔اس معاہدے سے ہم اپنی دو طرفہ تجارت 5 ارب ڈالرتک بڑھا سکیں گے۔ تجارت کافروغ ایک مسلسل عمل ہے جس کے لئے ہمیں مل کر چیلنجز پر قابو پانا ہے۔

 

Read Previous

پاکستان: بلیو ورلڈ سٹی کا گولڈ میڈلز جیتنے پر ارشد ندیم اور محمد نوح دستگیر بٹ کو ایک ایک کنال کا پلاٹ دینے کا اعلان

Read Next

یورپی ممالک میں مونکی پاکس کیسز کی تعداد 17 ہزار سے تجاوز کر گئی

Leave a Reply