عالمی خوراک بحران کو روکنے میں ترکیہ کے کردار کے معترف ہیں، وزیراعظم پاکستان

وزیراعظم پاکستان شہباز شریف نے کہا کہ ہے کہ روس یوکرین جنگ کے وجہ سے خوراک کے عالمی بحران کو روکنے کے لیے ترکیہ کی طرف سے کی جانے والی کوششوں کو سراہتے ہیں اور اس زمن میں ترکیہ کے کلیدی کردار کے معترف ہیں۔

وزیراعظم نے ٹوئٹر پیغام میں کہا کہ استنبول میں یوکرین سے  اناج  کی  دنیا بھر میں ترسیل کے معاہدے پر دستخط سفارت کاری کی ایک تاریخ ساز  فتح ہے جس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ معنی  خیز مذاکرات  اور تعاون  کے ذریعے تمام بحرانوں کو ٹالا جا سکتا ہے۔ اس شاندار کامیابی پر میں اپنے بھائی صدر رجب طیب ایردوان  کو مبارکباد پیش کرتا ہوں اور عالمی خوراک کے بحران کو روکنے میں ترکیہ کے کلیدی کردار پر مشکور ہوں۔

استنبول میں معاہدہ طے

استنبول میں روسی وزیر دفاع اور یوکرینی وزیر انفرااسٹرکچر نےاقوام متحدہ اور ترکیہ کے ساتھ علیحدہ علیحدہ معاہدے پر دستخط کر لیے ہیں ۔

دونوں ملکوں کے رہنماؤں نے بحیرہ اسود کے ذریعے یوکرینی گندم کی ایکسپورٹ کے حوالے سے  اقوام متحدہ اور ترکیہ کے نمائندگان کے ساتھ معاہدے پر دستخط کیے۔

روس، یوکرین کے درمیان ترکیہ اور اقوام متحدہ کے تعاون سے ہونے والے اس معاہدے کے بعد بحیرہ اسود میں یوکرینی گندم کے شپمنٹس با آسانی نقل و حرکت کر  پائیں گے اور عالمی منڈی میں یوکرینی گندم کی شارٹیج ختم ہونے سے  غذائی قلت اور بھوک کے مسئلے میں بھی کمی آجائے گی۔

معاہدے کے مطابق  روس، یوکرینی گندم کی برآمد کے لیے بحیرہ اسود کے بند راستے کھول دے گا۔

خیال رہے کہ روس کی جانب سے یوکرین پر حملے کے بعد یوکرینی گندم کی عالمی منڈی تک رسائی رک جانے سے گندم کی عالمی قیمتوں میں کئی گنا اضافہ ہو گیا تھا، روس اور یوکرین کے درمیان معاہدے کی خبر کے ساتھ ہی عالمی منڈی میں گندم کی بڑھتی ہوئی قیمتوں میں کمی آنا شروع ہو گئی تھی۔

Read Previous

حرمین شریف کی حرمت کی خلاف ورزی کسی صورت برداشت نہیں کی جا سکتی، الشیخ عبدالرحمٰن السدیس

Read Next

ترکیہ نے آگ لگنے کے خطرے کے پیش نظر جنگلات میں داخلے پر پابندی لگا دی ہے

Leave a Reply