پاکستان کا صنعتی شعبہ شدید بحران کا شکار ہو گیا

 

پاکستان کا صنعتی شعبہ شدید بحران کا شکار ہو گیا۔

صنعتی خام مال کی درآمدات میں کمی، بڑھتی مہنگائی، شرح سود میں اضافہ اور سیاسی افراتفری نے صنعتی شعبے کو تباہی کے دہانے پر پہنچا دیا ہے۔

اکتوبر میں صنعتی پیداوار منفی سات اعشاریہ سات فیصد ہو گئی ہے۔

ادارہ شماریات نے لارج اسکیل مینوفیکچرنگ کے اعداد و بھی جاری کر دیے ہیں۔

رواں مالی سال کے چار ماہ میں صنعتی پیداوار منفی تین اعشاریہ چھ فیصد تک کم ہو گئی۔

ملک میں ذرمبادلہ کی قلت کے باعث بینکس صنعتی خام کے لیٹر آف کریڈٹس نہیں کھول رہے ہیں۔

کمزور روپے نے بھی صنعتی شعبے کی پیداوار کو متاثر کیا ہے۔

ڈالر کے مقابلے میں روپے کی مسلسل گرتی ہوئی قیمت سے صنعتکار مال امپورٹ نہیں کر رہے ہیں۔

ملک میں بڑھتی ہوئی مہنگائی سے عوام کی قوت خرید محدود ہو گئی ہے۔

شرح سود میں غیر معمولی اضافے سے صنعتی شعبہ بینک قرضوں کی واپسی اور نئی فنڈنگ حاصل نہیں کر پا رہا ہے۔

جولائی سے اکتوبر تک ٹیکسٹائل، پیٹرولیم پروڈکٹس، سیمنٹ اور آٹو انڈسٹری کی پیداوار میں نمایاں کمی ریکارڈ کی گئی ہے۔

Read Previous

ترکیہ آذربائیجان اور ترکمانستان کا کئی شعبوں میں تعاون کو فروغ دینے پر اتفاق ، وزیر خارجہ

Read Next

پاکستان میں اپنی نوعیت کی پہلی فائیو جی انوینشن لیب قائم کر دی گئی

Leave a Reply