fbpx
ozIstanbul

سعودی عرب کا ریڈ لسٹ میں شامل ممالک پر تین سال کی سفری پابندیاں عائد کرنے کا انتباہ

سعودی عرب نے اپنی سفری پابندی کی فہرست ریڈ لسٹ میں شامل ممالک کا سفر کرنے والے افراد پر 3 سال کی سفری پابندی لگانے کا انتباہ دیا ہے۔

برطانوی خبررساں ادارے رائٹرز کی رپورٹ میں سرکاری خبررساں ادارے ’سعودی پریس ایجنسی‘ کے حوالے سے بتایا گیا کہ یہ فیصلہ کورونا وائرس اور اس کی نئی اقسام کے پھیلاؤ کو روکنے کے لیے کیا گیا۔

رپورٹ کے مطابق وزارت داخلہ کے نامعلوم عہدیدار کا کہنا تھا کہ کچھ سعودی شہری جنہیں مارچ 2020 کے بعد حکام سے پیشگی اجازت لیے بغیر مئی میں بیرونِ ملک سفر کرنے کی اجازت دی گئی تھی، انہوں نے سفری قواعد کی خلاف ورزی کی۔

عہدیدار کا کہنا تھا کہ جو بھی اس میں ملوث پایا گیا اسے واپسی پر قانونی احتساب اور بھاری جرمانے کے علاوہ 3 سال کی سفری پابندی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔

خیال رہے کہ سعودی عرب نے متعدد ممالک کے سفر یا ٹرانزٹ پر پابندی لگا رکھی ہے۔

سعودی سفری پابندی کے شکار ممالک میں افغانستان، ارجنٹینا، برازیل، مصر، ایتھوپیا، بھارت، انڈونیشیا، لبنان، پاکستان، جنوبی افریقہ، ترکی، ویت نام اور متحدہ عرب امارات شامل ہیں۔

عہدیدار نے کہا کہ ’سعودی وزارت داخلہ نے اس بات پر زور دیا کہ شہریوں پر اب بھی مذکورہ بالا ریاستوں یا جن ممالک میں وبا قابو میں نہیں آئی یا نئی اقسام پھیل رہی ہیں، وہاں کے سفر یا کسی دوسرے ملک کے راستے سے وہاں جانے کی پابندی عائد ہے۔

خیال رہے کہ 3 کروڑ کی آبادی والی سب سے بڑی خلیجی ریاست میں منگل کے روز ایک ہزار 379 نئے کورونا کیسز سامنے آئے تھے جس کے بعد مجموعی کیسز کی تعداد 5 لاکھ 20 ہزار 774 ہوگئی تھی۔

علاوہ ازیں مملکت میں کورونا وائرس سے جاں بحق ہونے والوں کی تعداد 8 ہزار 189 ہے۔

گزشتہ برس جون میں سعودی عرب میں وبا اپنے عروج پر پہنچی تھی جب یومیہ کیسز کی تعداد 4 ہزار سے بڑھ گئی تھی جبکہ جنوری میں سب سے کم یعنی 100 بھی کم یومیہ کیسز سامنے آئے۔

پچھلا پڑھیں

پاک افغان تعلقات کے منفی تاثر کو ختم کرنے میں میڈیا کا کردار کلیدی ہے، پاک افغان یورتھ فورم کی میڈیا کانفرنس میں اتفاق

اگلا پڑھیں

پاکستانی وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی دو روزہ دورے پر بحرین پہنچ گئے

تبصرہ شامل کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے