turky-urdu-logo

پاکستانی سفارتی عملے کی ترکیہ سے اٹلی جانے والی کشتی کو پیش آئے حادثے میں ریسکیو کیے گئے پاکستانیوں سے ملاقات

پاکستانی سفارتی عملے نے ترکیہ سے اٹلی جانے والے غیرقانونی مہاجرین کی کشتی کو پیش آئے حادثے میں ریسکیو کیے گئے پاکستانیوں سے ملاقات کی ہے۔

گزشتہ روز اٹلی میں پاکستان کے سفیر علی جاوید نے کہا تھا کہ کشتی حادثے میں کتنے پاکستانی جاں بحق ہوئے، ابھی تصدیق نہیں کر سکتے۔

میڈیا سے بات کرتے ہوئے  علی جاوید کا کہنا تھاکہ کلابریا کے ساحل پرکشتی ڈوبنے کے واقعے میں 16 پاکستانیوں کو ریسکیوکیاگیا اور انہوں نے بتایا کہ  کشتی پر 20 پاکستانی سوار تھے۔

ان کا کہنا تھاکہ ڈوبنے والی کشتی پر سوار مزید 4 پاکستانی تاحال لاپتہ ہیں، کشتی حادثے میں کتنے پاکستانی جاں بحق ہوئے، ابھی تصدیق نہیں کر سکتے۔

بعد ازاں  پاکستانی سفارتی عملے نے کشتی حادثے میں بچائے گئے 16 پاکستانیوں سے ملاقات کی۔

پاکستان کے سفیر علی جاوید کا کہنا ہے کہ سفارتخانے کی سینیئر اہلکار نے میڈیکل کیمپ میں 16 پاکستانیوں سے ملاقات کی ،کشتی حادثہ کلابریا میں جس مقام پر ہوا سفارتخانے سے 9 گھنٹے کی مسافت پر ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ واقعے کی خبر ملتے ہی رات ہی کو سفارتخانے کے عملے کو جائے وقوع پر بھیجا گیا،کشتی حادثے میں بچ جانے والے 16 پاکستانیوں کی حالت خطرے سے باہر ہے۔

انہوں نے کہا کہ حادثے میں بچ جانے والوں نے بتایا کے کشتی میں 20 پاکستانی سوار تھے، ریسکیو کیے جانے والے 16پاکستانیوں کا تعلق مالاکنڈ ،حافظ آباد ،گوجرنوالہ اور گجرات سے ہے۔

سفیر علی جاوید کے مطابق سفارتخانہ کشتی حادثے کے معاملے کو قریب سے دیکھ رہا ہے ،سفارتخانہ 16 پاکستانیوں کی واپسی کے لیے اٹلی حکومت کے تعاون سے اقدامات کرے گا۔

خیال رہے کہ اتوار کو ترکیہ سے اٹلی جانے والے غیرقانونی مہاجرین کی کشتی سمندر میں چٹان سے ٹکرا کر ڈوب گئی جس کے نتیجے میں پاکستانیوں سمیت 59 افراد ہلاک ہوئے اور کئی لاپتہ ہیں۔

سفارتخانے نے ابتدائی طور پر 28 پاکستانیوں کی ہلاکت کی تصدیق کی تھی اور 12 لاپتہ قرار دیے تھے۔

Alkhidmat

Read Previous

ترکیہ بحیرہ روم میں نیٹو کی بحری مشقوں میں بہترین آبدوزوں کے ساتھ شریک ہے ، ترک وزیر دفاع

Read Next

فٹ بال:لیونل میسی بیسٹ فیفا پلیئر آف دی ائیر قرار

Leave a Reply