پاکستان میں 15 ستمبر سے تمام تعلیمی ادارے کھولنے کا فیصلہ

وفاقی و صوبائی وزرائے تعلیم نے ملک بھر میں 15 ستمبر سے میٹرک، کالج اور یونیورسٹی کی کلاسز میں تدریسی عمل شروع کرنے کا اصولی فیصلہ سنا دیا۔
وفاقی وزیر تعلیم شفقت محمود کی زیر صدارت بین الصوبائی وزرائے تعلیم کا اجلاس ہوا جس میں تمام صوبائی وزرائے تعلیم وڈیو لنک کے ذریعے شریک ہوئے جبکہ چیئرمین اور ایگزیکٹو ڈائریکٹر ایچ ای سی نے بھی شرکت کی۔
وزارت صحت کے حکام نے اجلاس کو بریفنگ دی جس کی روشنی میں 3 مراحل میں تعلیمی ادارے کھولنے کا فیصلہ کیا گیا۔
پہلے مرحلے میں 15 ستمبر سے نویں، کالج اور یونیورسٹی کی کلاسز کا آغاز کیا جا ئے گا۔ بڑے جماعتوں کی کلاسز کھولنے کے بعد کورونا کی صورتحال کا جائزہ لیا جائے گا۔ اگر حالات قابو میں رہے تو ایک ہفتے بعد 23 ستمبر کو چھٹی اور آٹھویں جماعت کی تدریسی عمل کا آغاز کیا جائے گا۔
تیسرے اور آخری مرحلے میں پہلی سے پانچویں جماعت کی کلاسز کا آغاز کیا جا ئے گا۔ تعلیمی اداروں میں سختی سے ایس او پیز پر عملدارمد کیا جائے گا۔
اجلاس کی سفارشارت این سی او سی (قومی رابطہ کمیٹی) کو بھجوائی جائیں گی جو حتمی فیصلے کی منظوری دے گی۔
اجلاس میں یکساں نصاب تعلیم کا معاملہ بھی زیر غور آیا اور وفاقی نظامت تعلیمات میں اینٹی ہراسمنٹ باڈیز کے صوبوں میں قیام پر گفتگو ہوئی۔
اجلاس میں تعلیمی ادارے کھولنے کے حتمی فیصلے کے ساتھ ساتھ ان سے متعلق ایس او پیز کو حتمی شکل دی گئی ہے۔

Read Previous

ترکی مہمان نواز ، پرکشش اور آگے بڑھنے کےمواقعوں کا حامل ملک ہے ،ووڈافون سربراہ

Read Next

بیسیکتاس کلب نے چلی کے ڈیفینڈر اینزو روکو سے علیحدگی اختیار کر لی

Leave a Reply