turky-urdu-logo

اسلامی تعاون تنظیم کے وفد کا اقوام متحدہ سے اسلامو فوبیا کے خلاف پلان آف ایکشن کی منظوری دینے کا مطالبہ

اسلامی تعاون تنظیم کے پاکستان سمیت دیگر رکن ممالک کے وفد نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریش سے ملاقات کی اور انہیں سویڈن میں حال ہی میں قرآن پاک کی بے حرمتی کے گھناؤنے واقعات پر مسلم دنیا میں پائے جانے والے شدید غم و غصے سے آگاہ کیا اور اسلامو فوبیا کے خلاف پلان آف ایکشن کی منظوری دینے کا مطالبہ کیا ۔

پاکستانی مندوب نے سیکرٹری جنرل کو آگاہ کیا کہ پاکستان کی پارلیمنٹ نے حال ہی میں سویڈن میں قرآن پاک کی بے حرمتی کےقابل مذمت فعل کی مذمت میں ایک قرارداد منظور کی ہے جس کی ایک کاپی انہوں نے اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنر ل کے حوالے کی۔انہوں نے ممالک پر زور دیا کہ وہ حال ہی میں اس مسئلے پر انسانی حقوق کونسل کی طرف سے منظور کی گئی قرارداد کی روشنی میں قرآن پاک کی بے حرمتی جیسی اشتعال انگیز کارروائیوں کو غیر قانونی قرار دیں جو تشدد کا باعث بن سکتے ہیں۔

انہوں نے اقوام متحدہ کے سربراہ کو بتایا کہ او آئی سی کی خواہش ہے کہ وہ اسلامو فوبیا کے خلاف ایک پلان آف ایکشن کی منظوری دیں۔اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل نے قرآن پاک کی بے حرمتی کے واقعات کو قابل مذمت اور گھنائونا قرار دیا۔ انہوں نے اس بات پر اتفاق کیا کہ انسانی حقوق کونسل کی طرف سے منظور کردہ قرارداد پر تمام رکن ممالک کو عمل درآمد کرنا چاہیے۔

سیکرٹری جنرل کے ترجمان سٹیفن دوجارک نے کہا کہ سیکرٹری جنرل نے مسلم کمیونٹی کے ساتھ یکجہتی کا اظہار کرتے ہوئے عدم رواداری، تشدد اور اسلامو فوبیا کی کارروائیوں کی مذمت کی جو کشیدگی ،امتیازی سلوک اور بنیاد پرستی کو بڑھاوا دیتے ہیں۔ بعد ازاں سفارتی گروپ نے جولائی کے مہینے کے لیے اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی صدارت کرنے والے ملک برطانیہ کی سفیر باربرا ووڈورڈ سے بھی ملاقات کی اور انہیں اشتعال انگیز کارروائیوں پر او آئی سی کے تحفظات سے آگاہ کیا ۔ 15 رکنی کونسل کے صدر سے درخواست کی گئی کہ وہ قرآن پاک کی بے حرمتی کے حالیہ واقعات کی مذمت میں بیان جاری کریں.

Alkhidmat

Read Previous

صدر ایردوان کی ترک شمالی قبرص کے صدر سے ون آن ون ملاقات

Read Next

دنیا بھر کے ممالک کو ترک شمالی قبرص کو جلد از جلد قبول کرنا چاہیے،صدر ایردوان

Leave a Reply