یوکرین سے اناج کے پہلے بحری جہاز کی روانگی کے لیے رابطہ کاری کی کوششیں جاری ہیں،ترک وزارت دفاع

ترکیہ کے وزارت دفاع کا کہنا ہے کہ یوکرین سے اناج کے پہلے بحری جہاز کی روانگی کے لیے رابطہ کاری کی کوششیں جاری ہیں۔

وزارت نے ٹویٹر پر کہا کہ ہم استنبول میں قائم مشترکہ کوآرڈینیشن سنٹر میں سخت محنت کر رہے ہیں تاکہ یوکرائن کی بندرگاہوں سےدنیا بھر کے ممالک کو اناج کی بحفاظت ترسیل ہو سکے۔

انکا مزید کہنا تھا کہ حکام کے درمیان ہم آہنگی جاری ہے کہ اناج سے لدے پہلے بحری جہاز کو جلد از جلد یوکرین کی بندرگاہوں سے روانہ کیا جائے گا۔

ترکیہ اور اقوام متحدہ کی ثالثی سے یوکرین اور روس نے جمعے کے روز استنبول میں بحیرہ اسود کی بندرگاہوں سے یوکرین کے اناج کی ترسیل دوبارہ شروع کرنے کے معاہدے پر دستخط کیے ہیں۔

استنبول میں ہونے والی بات چیت کے دوران اقوام متحدہ کی قیادت میں طے پانے والے اس معاہدے کے تحت، بندرگاہوں کے داخلی اور خارجی راستوں پر مشترکہ معائنہ کرنے اور راستوں کی حفاظت کو یقینی بنانے کے لیے ایک رابطہ مرکز قائم کیا گیا ہے۔

بین الاقوامی سطح پر ترکیہ کے ثالثی کے کردار کی تعریف بھی کی گئی ہے، ترکیہ نے ماسکو اور کیف کے ساتھ مل کر یوکرین کے بندرگاہی شہر اوڈیسا سے ایک راہداری کھولی تاکہ 24 فروری کو روس اور یوکرائن کے درمیان جاری جنگ کی وجہ سے طویل عرصے سے رکی ہوئی عالمی اناج کی ترسیل کو دوبارہ شروع کیا جا سکے۔

Read Previous

ترکیہ نے گندے پانی کو دوبارہ قابل استعمال بنانے کا سالانہ ہدف مکمل کرلیا

Read Next

صدر ایردوان کا لوزان امن معاہدے کی 99 ویں سالگرہ کے موقع پر خصوصی پیغام

Leave a Reply