دنیا کے 40 فیصد پودے خطرے میں

ماہرین کی ایک تحقیق کے مطابق  دنیا کے 5 لاکھ شناخت شدہ پودوں اور کوکیوں  کے گروپوں میں سے 40 فیصد کے ختم  ہونے کا خطرہ ہے۔

برطانیہ کے رائل بوٹینک گارڈن (آر بی جی) نے "اسٹیٹ آف دی ورلڈ” کی ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ تشخیص اور تجزیہ کے لئے مزید نفیس تکنیکوں نے سائنس دانوں کو پچھلے اعداد و شمار میں پودوں کے گروہوں اور علاقوں کی پیش کش کو درست تعصب دینے کی اجازت دی تھی۔

اس رپورٹ میں 42 ممالک سے210سائنس دانوں نے شرکت کی ۔

اعداد و شمار کے مطابق تقریبا 723 کے قریب پودوں کی نسلیں خطرے سے دوچار ہیں۔

اس رپورٹ میں ایسے پودوں کے استعمال کو بھی اجاگر کیا گیا ہے جو خوراک یا توانائی کے ممکنہ ذرائع ہیں۔

اس نے 7،039 خوردنی پودوں کی گنتی کی ہے لیکن کہا ہے کہ دنیا کی 90 فیصد فوڈ انرجی کی مقدار صرف 15 پودوں سے حاصل ہوتی ہے ، اور تقریبا 4  ارب افراد چاول ، مکئی اور گندم پر مکمل انحصار کرتے ہیں۔

آر بی جی میں سائنس کے ڈائریکٹر الیکژنڈر اینٹونییلی نے کہا ہے کہ اس سال کی رپورٹ سے سامنے آنے والے اعداد و شمار میں ایک ایسی دنیا کی تصویر پیش کی گئی ہے جس نے پودوں اور کوکیوں کی فوڈ سکیورٹی اور آب و ہوا کی تبدیلی جیسے بنیادی عالمی امور کو حل کرنے کی صلاحیت سے منہ موڑ لیا ہے۔

انتونییلی نے کہا ہے کہ معاشرے بہت طویل عرصے سے بہت کم پودوں کے گروپوں  پر انحصار کرتے رہے ہیں۔

Read Previous

ترکی میں دل کے امراض انسانی ہلاکتوں کی بڑی وجہ

Read Next

ترک فیچر فلم اے ایف ( بخشش) کا پریمیئر ٹوکیو کے 33 ویں انٹر نیشنل فلم فیسٹیول میں ہو گا

Leave a Reply