اناج برآمد معاہدے کی کامیابی کے لیے تمام فریقین کے ساتھ مل کر کام کر رہے ہیںِ ترک وزیر دفاع

ترک وزیر دفاع حلوصی آقار کا کہنا ہے کہ اناج برآمد معاہدہ کے تحت آج یوکرین سے مزید تین بحری  جہاز اشیائے خوردونوش  لے کر روانہ ہوں گے

وزیر نے بتایا کہ مشترکہ رابطہ مرکز  کی انتھک کاوشوں کی بدولت  یوکرین سے عالمی اجناس کی منڈیوں کی جانب  اناج سے لدے تین مزید  بحری جہازوں سے اپنا سفر شروع کر دیا ہے۔

علاوہ ازیں  استنبول کی بندرگاہ  پر ایک خالی بحری جہاز بھی پہنچے گا جسے سیکورٹی  کلیئرنس کے بعد یوکرین روانہ کیا جائے گا۔

حلوصی آقار کا کہنا تھا کہ ترکیہ اس معاہدہ کی کامیابی کے لیے روس ، یوکرین اور اقوام متحدہ کے ساتھ مل کر کام کر رہا ہے۔

یوکرین کے وزیر دفاع اولیکسی ریزنکوف اور انفراسٹرکچر کے وزیر اولیکسینڈر کبراکوف نے ترک وزیر سے الگ الگ  ملاقاتیں کی  اور  اناج کی ترسیل کی کوششوں اور تازہ ترین صورتحال پر تبادلہ خیال کیا۔

خیال رہے کہ روس اور یوکرین دنیا بھر میں اناج کی ترسیل کرنے والے سب سے بڑے ممالک ہیں اور دونوں ممالک کے درمیان یوکرینی اناج برآمدگی کا معاہدہ کچھ دن قبل اقوام متحدہ اور ترکیہ کی ثالثی میں ہوا تھا۔

رواں برس فروری میں یوکرین پر روسی حملے کے بعد سے گندم برآمدات کی بندش کی وجہ سے دنیا بھر میں اناج قلت پیدا ہو گئی تھی اور  اناج کی قیمتوں میں اضافہ ہو گیا تھا

Read Previous

پاکستانی ہاکی ٹیم کو کامن ویلتھ گیمز میں آسٹریلیا کے ہاتھوں شکست کا سامنا

Read Next

ترکیہ کی سپریم ملٹری کونسل کا اجلاس ، ترک فوج کی اعلیٰ قیادت کے متعلق اہم فیصلے

Leave a Reply