fbpx
ozIstanbul

ترکی:دنیا کی سب سے لمبی خاتون پوری دنیا کا سفر کرنے کی خواہشمند

دنیا کی سب سے لمبی خاتون رومیسا وہیل چیئر اور واکر پر انحصار کرنے کے باوجود دنیا بھر کا سفر کرنے اور مختلف ثقافتوں کے بارے میں جاننے کی خواہشمند ہیں۔

پچھلے مہینے ، گینیز ورلڈ ریکارڈ نے 24 سالہ ترک خاتون رومیسا کو دنیا کی سب سے لمبی خاتون ہونے کا ایوارڈ دیا تھا۔انکا قد 7 فٹ 7 انچ ہے۔

انہیں 2014 میں سب سے لمبی نو عمر بچی ہونے کا ایوارڈ بھی ملا تھا۔

رومیسا نےمیڈیا کو بتایا کہ اس نے ہمیشہ سڑک کے ذریعے سفر کیا ہےاور کبھی بھی فضائی سفر نہیں کیا۔

انکا کہنا تھا کہ وہ اپنی حالت کی وجہ سے کبھی بھی بیرون ملک نہیں جا سکی۔

انہیں ہر وقت ویل چیر کا سہارا لینا پڑتا ہے مگر کبھی کبھی وہ اپنے پیروں پر کھڑے ہونے کی بھی کوشش کرتی ہیں اور چلتی پھرتی ہیں۔

انکا کہناتھا کہ مختلف ممالک اور ثقافتوں کو دیکھنا انکی خواہشات میں سے ایک ہے۔

رومیسا نے بتا یاکہ جب انہوں نے پہلی بار ایوارڈ حاصل کیا تو انہیں پولینڈ اور فرانس سے دعوت نامے موصول ہوئے مگر وہ وہاں نہ جا سکی۔

اس بار انہیں روس کی طرف سے دعوت نامہ موصول ہوا ہے اور وہ وہاں ضرور جانا چاہیں گی۔

رومیسا صرف دو گھنٹے ہی سیدی بیٹھ سکتی ہیں علاوہ ازیں انہیں لیٹ کر اپنا زیادہ تروقت گزارنا پڑتا ہے۔

انکا کہنا تھا کہ وہ بیٹھ کر ہوائی سفر نہیں کر سکتیں اس لیے انکے لیے لیٹ کر سفر کرنے کے لیے کوئی جگہ ہونی چاہیے۔

انہوں نے مزید بتایا کہ انکا لمبا قد انہیں اٹھنے بیٹھنے میں بہت تنگ کرتا ہے اور انہیں ہر وقت مشکل کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

انکا کہنا تھا کہ وہ ٹیک لگانے والی سیٹوں پر بھی آرام سے نہیں بیٹھ سکتی اور وہ صرف لیٹ کر ہی سفر کر سکتی ہیں۔

انکا کہنا تھاکہ انکی سب سے بڑی طاقت انکے گھر والے ہیں۔

رومیسا کا کہنا تھا کہ وہ بیمار نہیں ہے مگر انکا تیزی سے بڑھتا لمبا قد انکے لیے مسائل پیدا کرتا ہے۔

انکا کہنا تھا کہ وہ ان مسائل کے ساتھ بچن سے لڑ رہی ہیں اور جسم کو ہلا نہ پانا سب سے برا مسئلہ ہے۔

رومیسا ترکی میں پیدا ہوئیں تھیں اور اس وقت انکا وزن 5 کلو جبکہ انکا قد 53 سینٹی میٹر تھا۔

پیدائش کے 2 مہینے بعد انکے گھر والوں کو معلوم ہوا کہ انکے دل میں سوراخ ہے اور انکا آپریشن کرنا پڑے گا۔

رومیسا نے بچپن سے ہی تمام حالات کا بہت ہی بہادری سے سامنا کیا ہے۔

پچھلا پڑھیں

ہندو انتہا پسندوں نے کانگرس رہنما سلمان خورشید کے گھر کو نشانہ بنا لیا

اگلا پڑھیں

2023 کے الیکشن میں نوجوان نسل کلیدی کردار ادا کرے گی، صدر ایردوان

تبصرہ شامل کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے