استنبول معاہدے کے بعد ترکیہ ایک چوتھائی سے زائد کھیپ یوکرین سے موصول کر چکا ہے،اقوام متحدہ

اقوام متحدہ کا کہنا ہے کہ استنبول معاہدے کے بعد ترکیہ یوکرین سے برآمد ہونے والے ایک چوتھائی سے زیادہ اناج اور دیگر اشیائے خوردونوش موصول کر چکا ہے۔

اعداد و شمار کے مطابق یکم اگست سے ترکیہ کو 26 فیصد کھیپیں موصول ہوئیں ہیں۔

چین نے یوکرین سے برآد ہونے والے اناج کا 8 فیصد، آئیر لینڈ نے 6 فیصد، اٹلی نے 5 فیصد ، جبوتی نے 5 فیصد اور رومانیہ نے 2 فیصد حاصل کیا۔

بحری جہازوں میں مجموعی طور پر اب تک 5 لاکھ 63 ہزار میٹرک ٹن اناج اور دیگر اشیائے خوردونوش کو لے جایا گیا۔

پچھلے ماہ میں ترکیہ ، اقوام متحدہ ، روس اور یوکرین نے استنبول میں طے پانے والے معاہدے پر دستخط کیے تھے تاکہ روس یوکرین جنگ کی وجہ سے پھنسے یوکرائنی اناج کی برآمد کے لیے بحیرہ اسود کی 3 بندرگاہوں کو دوبارہ کھول دیا جائے ۔

یکم اگست کو پہلی روانگی کے بعد سے اب تک اناج اور گندم لے جانے والے کل 21 بحری جہاز معاہدے کے تحت یوکرین کی بندرگاہوں سے نکل چکے ہیں۔

Read Previous

استنبول معاہدے کے تحت پانچ مزید اناج سے لدے جہاز یوکرین کی بندرگاہوں سے روانہ

Read Next

ترکیہ کی روس سے ایس 400 دفاعی میزائل سسٹم کی دوسری کھیپ لینے کی تردید

Leave a Reply