fbpx
ozIstanbul

افغانستان میں پاکستان کے ذریعے امداد بھجوانا جاری رکھیں گے ، ترک وزیر خارجہ

ترکی افغان حکومت سے مسلسل رابطے میں ہے ۔ کابل میں ترک سفارتحانے کے ذریعے طالبان سے بات چیت بھی جاری ہے ۔

ترک وزیر  خارجہ نے کابینہ کے اجلاس کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے  بتایا کہ ترکی افغانستان میں ہمسایہ ملک پاکستان کے ذریعے امداد بھجوانا جاری رکھے گا۔  کابل میں ہمارا سفیر تمام افغان عہدیداروں سے ملاقات کر رہا ہے ابھی مذاکرات سفارتکار کی سطح پر جاری ہیں۔

مذاکرات کاموضوع ملک میں انسانی ہمدردی کے تحت امداد بھجوانا ہے۔

وزیر کا کہنا تھا کہ ہم موسم سرما کے لیے ادویات، کھانے پینے کی اشیا اور دیگر ضرورت کی اشیا فراہم کرنے کے حوالے سے بات چیت   جاری ہے ۔ ہم جانتے ہیں افغان عوام کی ضروریات ہیں  اور ان  کو پورا کرنے کے حوالے سے  مذاکرات جاری ہیں۔  اس مقصد کے لیے ترک ادارہ ہلال احمر بھی میدان  میں ہے۔

وزیر  نے بتایا کہ اجلاس میں پاکستان کے ذریعے امداد بھجوانے کے حوالے سے  بھی بات چیت کی گئی ۔ ہم زیادہ تر  پاکستان سے اشیا خریدیں گے۔

وزیر نے ایک سوال  کے جواب میں کہا کہ    انسانی ہمدری کے تحت امداد فراہم کرنے کی کوئی باقاعدہ  درخواست نہیں  بھجوائی  البتہ زبانی کلامی بات  ہوئی ہے ۔ پوری دنیا  وہاں کے حالات کے سے واقف ہے۔  ہم تمام ممالک کو افغانستان کی طرف متوجہ کرنے کی کوشش کر رہے ہیں۔   کہنے   کا مقصد یہ ہے کہ افغانستان اور  اس کی معیشت کو تباہ نہیں ہونی چائیے۔

کابل ائیرپورٹ کی سیکورٹی سنبھالنے  کے حوالے سے بتاتے ہوئے وزیر کا کہنا تھا کہ صورتحال فلحال غیر یقینی ہے اور مذاکرات جاری ہیں۔ سیکورٹی خدشات پر بات نہیں کی گئی  البتہ چارٹر پروازیں عارضی  طور پر  جاری رہیں گی ۔ باقاعدہ پروازوں کے لیے شرائط ابھی تک تشکیل نہیں دیں گئیں اس بارے میں مذاکرات جاری ہیں۔

پچھلا پڑھیں

ترکی:17 غیر ملکی شہریوں کو غیر قانونی طور پر ملک میں داخل ہوتے ہوئے پکڑ لیا گیا

اگلا پڑھیں

مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی پامالی نظر انداز نہیں کی جا سکتی،وزیر خارجہ پاکستان

تبصرہ شامل کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے