TurkiyaLogo-159

نیشل سیکورٹی کونسل کا اجلاس صدارتی کمپلیکس میں منعقد

ملک کی قومی سلامتی کونسل کا کہنا ہے کہ ترک قوم کی سلامتی، امن اور بہبود کو یقینی بنانے کے لیے درکار اقدامات "ترکیہ کی صدی” میں اسی عزم کے ساتھ جاری رہیں گے۔

28 مئی کو صدر رجب طیب ایردوان کے دوبارہ منتخب ہونے کے بعد اور نئی حکومت کے اقتدار سنبھالنے کے بعد ملک کے اعلیٰ ادارے کا پہلی بار اجلاس ہوا۔

جس میں یوکرین جنگ، شام، قفقاز اور کوسوو سمیت عالمی امن و سلامتی سے متعلق امور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

کونسل نے ایک بیان میں کہا کہ شام کا دائمی امن اور علاقائی سالمیت صرف تمام دہشت گرد گروہوں کے خاتمے کے ذریعے ہی ممکن ہے، اور شامیوں کی رضاکارانہ، محفوظ اور باوقار وطن واپسی میں سہولت فراہم کرنے کے لیے بین الاقوامی تعاون کی اہمیت کا اعادہ کیا۔

روس اور یوکرین کے درمیان جاری تنازعہ پر، جو گزشتہ سال فروری میں شروع ہوا، کونسل نے کہا کہ ترکیہ امن کی کوششوں میں اپنا حصہ ڈالتا رہے گا۔

اس نے آذربائیجان اور آرمینیا کے درمیان تعلقات کو معمول پر لانے کے لیے بات چیت میں پیش رفت پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ قفقاز میں امن کے لیے ایک منصفانہ حل ضروری ہے۔

کوسوو اور سربیا کے درمیان کشیدگی پر، اعلیٰ حکام نے بلقان کے علاقے میں ترکیہ کی حمایت کی اہمیت کو اجاگر کیا کیونکہ بات چیت کا عمل جاری ہے۔

سوڈان میں پیش رفت کے حوالے سے، ترکیہ نے متحارب فریقوں، فوج اور نیم فوجی دستوں پر زور دیا کہ وہ اپنے مسائل کو پرامن طریقے سے حل کریں، اور فوری جنگ بندی کا اعلان کریں۔

Alkhidmat

Read Previous

ایک ماہ میں روایتی ترک تیر اندازی سیکھنے کا بہترین موقع

Read Next

جنوبی کراچی ضلع  ڈپٹی کمشنر غلام مرتضی شیخ کا ترک کراچی قونصلیٹ کا دورہ

Leave a Reply