5 اگست یوم استحصال کشمیر، پاکستان میں یہ دن بھرپور طریقے سے منایا جائے گا

پاکستان بھارت کے غیر قانونی زیر تسلط جموں و کشمیر کی خصوصی حیثیت کو ختم کرنے کے غیر قانونی، غیر اخلاقی اور غیر آئینی اقدام کی مذمت اور بھارتی فوجی محاصرے کے 3 سال مکمل ہونے پر 5 اگست کویوم استحصال منائے گا۔

حکومت نے یوم استحصال کے موقع پر مظلوم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے سیمینار اور کانفرنسز سمیت متعدد پروگرامز کا اہتمام کیا ہے جبکہ کشمیریوں کی حمایت میں ملک بھر میں ریلیاں نکالی جائیں گی جس میں ہر طبقہ فکر کے افراد بھرپور شرکت کریں گے۔ پوری قوم اپنے کشمیری بھائیوں کو یہ پیغام دے گی کہ پاکستانی عوام ان کی حق خودارادیت کی منصفانہ جدوجہد اور بھارتی افواج کے مظالم کے خلاف ہمیشہ ان کے ساتھ کھڑے رہیں گے۔

لائن آف کنٹرول کے دونوں جانب اور دنیا بھر میں مقیم کشمیری بھی 5 اگست 2019 کے بھارت کے غیر آئینی اقدام کی مذمت کے لیے یوم استحصال منائیں گے۔ ملک کی تمام سیاسی جماعتوں کے کارکنان ریلیوں اور دیگر سرگرمیوں کے ذریعے نہتے کشمیریوں پر ہونے والی بھارتی ریاستی دہشت گردی کے خلاف احتجاج ریکارڈ کرائیں گے۔ سول سوسائٹی کی تنظیمیں کشمیری عوام کے خلاف انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کو اجاگر کرنے کے لیے سیمینارز اور دیگر پروگرامز کا بھی اہتمام کریں گی۔

یوم استحصال کے موقع پر ملک بھر میں ایک منٹ کی خاموشی اختیار کی جائے گی، ٹریفک کو ایک منٹ کے لیے روک دیا جائے گا اور سائرن بجائے جائیں گے۔ ایک منٹ کی خاموشی کے فوراً بعد ریڈیو پاکستان اور پاکستان ٹیلی ویژن سمیت الیکٹرانک میڈیا چینلز پر پاکستان اور آزاد جموں و کشمیر کے قومی ترانے بجائے جائیں گے۔

دریں اثنااسلام آباد اور صوبائی دارالحکومتوں کی اہم شاپراہوں پر کشمیریوں کی حالت زار کو اجاگر کرنے اور جموں و کشمیر میں قابض افواج کی طرف سے ڈھائے جانے والے مظالم کو اجاگر کرنے کے لیے پوسٹرز اور بل بورڈز آویزاں کیے گئے ہیں۔ مودی کی زیر قیادت بھارتیہ جنتا پارٹی کی حکومت نے 5 اگست 2019 کو بھارتی آئین کے آرٹیکل 370 اور 35A کو ختم کردیا تھا، اس قانون کے تحت کشمیر کو خصوصی حیثیت دی گئی تھی۔

Read Previous

پاکستان کی پہلی بین الاقوامی میری ٹائم ایکسپو 2023 کے انعقاد کا اعلان

Read Next

بلیو ورلڈ سٹی کی جانب سے سپورٹس ویلی میں پاکستان کا سب سے بڑا کرکٹ سٹیڈیم متعارف کروانے کا اعلان

Leave a Reply