ozIstanbul

پاکستان: غیر ملکی سرمایہ کاروں کو شہریت دینے کا فیصلہ

پاکستانی حکومت نے ایک نئے انقلابی اقدام کے تحت غیر ملکی سرمایہ کاروں کو پاکستانی شہریت دینے کا فیصلہ کیا ہے، یہ فیصلہ خاص طور پر افغان اور چینی شہریوں سے بھاری سرمایہ کاری حاصل کرنے کے لیے کیا گیا ہے۔

وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے ایک ٹوئٹ کے ذریعے اس منصوبے کی تصدیق کی۔

حکومت کا خیال ہے کہ وہ غیر ملکی سرمایہ کاروں کو پاکستانی شہریت اور ملکیتی حقوق دے کر اربوں ڈالر کی غیر ملکی سرمایہ کاری حاصل کرے گی۔

فواد چوہدری نے پاکستان کی نئی قومی سلامتی پالیسی کے پیش نظر جیو اکنامکس کو اپنے قومی سلامتی کے نظریے کا بنیاد قرار دیا۔

انہوں نے کہا کہ حکومت نے غیر ملکی شہریوں کے لیے مستقل رہائش کی اسکیم کی اجازت دینے کا فیصلہ کیا ہے، نئی پالیسی غیر ملکیوں کو سرمایہ کاری کے بدلے مستقل رہائشی کا درجہ حاصل کرنے کی اجازت دیتی ہے۔

اس پیش رفت کے مطابق حکومت اُن دولت مند افغان شہریوں سے بھاری سرمایہ کاری کو راغب کرنا چاہتی ہے جو اس وقت ایران، ترکی اور ملائیشیا جیسے ممالک میں سرمایہ کاری کر رہے ہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ حکومت کو یہ بھی امید ہے کہ امریکا میں مقیم سکھ شہری ملک میں سکھوں کے مذہبی مقامات سے اپنی محبت کی وجہ سے پاکستان میں مختلف شعبوں میں سرمایہ کاری کرنے میں خوش ہوں گے۔

علاوہ ازیں وزیر اعظم عمران خان نے اپنے حالیہ بیانات میں اشارہ دیا کہ وہ اعلیٰ چینی سرمایہ کاروں کو راغب کرنا چاہتے ہیں جنہوں نے اپنی صنعتیں خطے کے دیگر ممالک میں منتقل کی ہیں۔

حکومت نے یہ بھی امید ظاہر کی کہ امیر عرب حکمران، جو ہر سال شکار کے لیے پاکستان آتے ہیں، پاکستانی شہریت حاصل کرنا چاہیں گے۔

پچھلا پڑھیں

ترکی میں اسلامی اقدار کے احیاء کے لئے ترک نوجوانوں کی تنظیم ایلکے نے مرکزی کردار ادا کیا

اگلا پڑھیں

ترکی خلائی میدان میں لانچ سسٹم اور سیٹلائٹ سسٹم پر کام جاری رکھے ہوئے ہے ،صدر ایردوان

تبصرہ شامل کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے