کوویڈ پازیٹیو مائیں بچوں کو دودھ پلانا جاری رکھیں؛ ڈبلیو ایچ او

ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن (ڈبلیو ایچ او) کے مطابق کوویڈ 19 سے متاثرہ ماؤں کو عام طور پر دودھ پلانا جاری رکھنا چاہئے اور انہیں اپنے بچوں سے الگ نہیں کیا جانا چاہئے۔کیونکہ اس کے فوائد خطرے سے زیادہ ہیں۔

ڈبلیو ایچ او کے سربراہ ٹیڈروس اذانوم گریبیسس نے ایک ورچوئل پریس کانفرنس میں بتایا کہ امریکی صحت کی ایجنسی نے دودھ پلانے کے دوران ماوں کا اپنے بچوں  میں کورونا وائرس منتقل کرنے کی کے پوری جانچ پڑتال کی ہے۔

انہوں نے کہا ، "ہم جانتے ہیں بچوں میں کوویڈ 19 کا خطرہ نسبتا کم ہوتا ہے ، لیکن انھیں متعدد دیگر بیماریوں  کا زیادہ خطرہ ہے جن سے ماں کے دودھ کے ذریعے بچا جا سکتا ہے۔”

انہوں نے مزید کہا ، "موجودہ شواہد کی بنا پر ، ڈبلیو ایچ او کا مشورہ یہ ہے کہ دودھ پلانے کے فوائد COVID-19 منتقل ہونے کے کسی بھی ممکنہ خطرے سے کہیں زیادہ ہیں۔”

تولیدی صحت اور تحقیق کی ڈبلیو ایچ او کی سینئر مشیر انشو بنرجی نے بریفنگ میں بتایا کہ ابھی تک  براہ راست وائرس ماں کے دودھ میں نہیں پایا گیا جس کی وجہ سے کورونا وائرس ہوتا ہے۔ ٹیڈروس نے کہا ، "مشتبہ یا تصدیق شدہ کویڈ 19 والی ماؤں کو دودھ پلانا شروع کرنے اور جاری رکھنے کے لئے حوصلہ افزائی کی جانی چاہئے اور جب تک  ماں زیادہ بیمار نہ ہو ، اپنے بچوں سے الگ نہ ہوں۔”

Read Previous

ترک ایجنسی کی ازبکستان میں ڈیم متاثرین کی مدد

Read Next

ترک اسٹاک میں 1.22٪ کا اضافہ

Leave a Reply