fbpx
ozIstanbul

نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم کی 18 سال بعد پاکستان آمد

نیوزی لینڈ کی ٹیم 18سال بعد پاکستان کے دورے پر پہنچ گئی ہے جہاں دونوں ٹیموں کے درمیان ون ڈے اور ٹی20 میچوں کی سیریز کھیلی جائے گی۔

پاکستان اور نیوزی لینڈ کے تین ون ڈے اور پانچ ٹی20 میچوں پر مشتمل سیریز کھیلی جائے گی۔

دونوں کرکٹ بورڈز نے فیصلہ کیا ہے کہ ڈی آر ایس سسٹم کی عدم دستیابی کے سبب سیریز کو دوطرفہ سیریز کا درجہ دیا گیا ہے اور آئی سی سی کرکٹ ورلڈ کپ سپر لیگ کا حصہ نہیں بنایا گیا۔

ڈی آر ایس سسٹم کے لیے آئی سی سی کے نامزد آفیشلز دستیاب نہیں تھے جس کی وجہ سے سیریز میں یہ ٹیکنالوجی دستیاب نہیں ہو گی۔

پاکستان آمد کے بعد اب نیوزی لینڈ کی ٹیم تین دن آئسولیشن میں گزارے گی جس کے بعد وہ پریکٹس کا آغاز کرے گی۔

اس سیریز کے لیے نیوزی لیند کو اہم کھلاڑیوں کی خدمات حاصل نہیں ہیں اور ٹیم کی قیادت بھی مستقل کپتان کین ولیمسن کی جگہ ٹام لیتھم کریں گے۔

دونوں ٹیموں کے درمیان تمام ایک روزہ میچز راولپنڈی کرکٹ اسٹیڈیم میں 17، 19 اور 21 ستمبر کو کھیلے جائیں گے جبکہ تمام ٹی ٹوئنٹی میچز قذافی اسٹیڈیم لاہور میں 25 ستمبر سے 3 اکتوبر کے درمیان کھیلے جائیں گے۔

آئندہ ماہ ٹی20 ورلڈ کپ کے پیش نظر اس سیریز کو عالمی کپ کی تیاریوں کے سلسلے میں انتہائی اہم تصور کیا جا رہا ہے۔

نیوزی لینڈ کی ٹیم آئندہ سال دو ٹیسٹ اور تین ون ڈے میچوں کی سیریز کھیلنے کے لیے دوبارہ پاکستان کا دورہ کرے گی۔

2002 میں نیوزی لینڈ کے دورہ پاکستان کے دوران ٹیم ہوٹل کے قریب بم دھماکے میں 14 افراد کی ہلاکت کے بعد نیوزی لینڈ کی ٹیم وطن واپس لوٹ گئی تھی۔

اس کے بعد نیوزی لینڈ نے اگلے سال 2003 میں پاکستان کا آخری دورہ کیا تھا جس میں 5 ایک روزہ میچز کھیلے گئے تھے۔

پچھلا پڑھیں

واٹس ایپ نےاینڈ ٹو اینڈ انکرپٹڈ چیٹ بیک اپ کا فیچر متعارف کروادیا

اگلا پڑھیں

پاکستانی خطاط محمد علی زاہد کا عالمی اعزاز

تبصرہ شامل کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے