ozIstanbul

ترکی کا سیاحتی شعبہ قومی معیشت سے دوگنا ترقی کرے گا، ورلڈ ٹریول اینڈ ٹورازم کونسل

ورلڈ ٹریول اینڈ ٹورازم کونسل (WTTC) کے اکنامک امپکٹ رپورٹ کے مطابق، ترکی کے سفر اور سیاحت کی جی ڈی پی میں آنے والے دس سالوں کے  5.5فیصد سالانہ اضافہ ہو سکتا ہے ، جو کہ ملک کی مجموعی معیشت کی 2.5 فیصد شرح نمو کے دو گنا سے زیادہ ہے

ڈبلیو ٹی ٹی سی کے مطابق 2032 تک، ملک کی جی ڈی پی میں اس شعبے کا حصہ تقریباً  117 بلین ڈالر تک پہنچ سکتا ہے، جو کل معیشت کا 11 فیصد ہے۔ جس سے آنے والے وقت میں لاکھوں کی تعداد میں نئی ملازمتیں بھی متوقع ہیں

اس سال کے آخر تک اس شعبے کا   جی ڈی پی 15.5 فیصد بڑھ کر تقریباً 607 بلین لیرا تک پہنچنے کی توقع ہے، جو کہ ملکی معیشت کا 8.3 فیصد بنتا ہے، جس سے ملک میں نئے روزگار کے مواقع پیدا ہونگے۔

تازہ ترین فلائٹ بکنگ کے اعداد و شمار کے مطابق ترکی یورپ کا چوتھا سورج کی تپش سے لطف اندوزہونے والوں کے لیے مقبول ترین مقام بن چکا ہے

ڈبلیو ٹی ٹی سی کی صدر اور سی ای او جولیا سمپسن نے کہا کہ  وبائی مرض کروناسے پہلے ترکی کی معیشت بین الاقوامی سیاحت پر بہت زیادہ انحصار کرتی تھی، اس لیے اس کی بحالی معیشت اور ملازمتوں دونوں کے لیے اہم ہے۔ 2019 میں ترکی سیاحت کا جی ڈی پی 11فیصد تھا جو کہ 2020 میں صرف 5.1 فیصد رہ چکا تھا

2021 میں  دوبارہ ترکی کے سفر اور سیاحت کے شعبے کی بحالی کا آغاز ہوا۔ اور تقریباً 40ملین سے زیادہ لوگوں نے ملک کا دورہ کیا

پچھلا پڑھیں

ترک باکسر دوران فائٹ دل کا دورہ پڑنے سے چل بسے

اگلا پڑھیں

امریکہ سے F-16 ڈرون طیاروں کی خریداری کا معاملہ مثبت راہ پر ہے، وزیر خارجہ

تبصرہ شامل کریں