ozIstanbul

مقبوضہ کشمیر کے حریت رہنما برہان وانی شہید کی پانچویں برسی

جدوجہد آزادی کی علامت برہان وانی کے پانچویں یوم شہادت پر مقبوضہ کشمیر میں مکمل ہڑتال ہے۔ بھارتی مظالم کے خلاف ریلیوں کے خوف سے وادی کو چھاؤنی میں تبدیل کر دیا گیا۔

مقبوضہ کشمیر میں تحریک آزادی کو نئی جلا بخشنے والے شہید برہان وانی کا آج پانچواں یوم شہادت ہے۔ اس موقع پر مقبوضہ وادی میں مکمل ہڑتال ہے۔ ہڑتال کی کال حریت قیادت نے دی۔ آزادی کے ہیرو کو خراج عقیدت پیش کرنے کے لیے نکلنے والی ریلیوں کو روکنے کے لیے وادی کو چھاؤنی میں تبدیل کر دیا گیا ہے جہاں جگہ جگہ قابض فوج کے پہرے ہیں۔

حریت رہنماؤں کی  تعزیت

حریت رہنما یاسین ملک کی اہلیہ مشعال ملک کاکہنا ہے کہ برہان وانی نے 8 لاکھ بھارتی فوج کو نہتے للکارا، وہ ان چند عظیم شہیدوں سے ایک ہیں جن کا انتخاب شہادت نے کیا۔

مشعال ملک نے برہان مظفر وانی کی پانچویں برسی پر بیان دیتے ہوئے کہاکہ آج کا دن برہان وانی کی شہادت کا دن ہے،برہان وانی کی شہادت کو کئی سال گزر گئے لیکن بھارتی فوج آج بھی خوفزدہ ہے۔

انہوں نے کہاکہ بھارتی فوج نے وانی کی برسی پر کرفیو لگا دیا، کشمیریوں کو گھروں میں بند کر رکھا ہے،ایک کشمیری کی شہادت لاکھوں بھارتی فوجیوں پر بھاری ہے۔

مشعال ملک کاکہنا تھا کہ جنت کی حفاظت شہید کر رہے ہیں، یہ کیسے ممکن ہے فتح نصیب نہ ہو۔

انہوں نے کہاکہ بھارت کی غلامی کو کشمیریوں نے نہ پہلے مانا نہ اب مانیں گے،ایک دن آئے گا جب کشمیریوں کو آزادی نصیب ہو گی۔

پاکستانی وزیر خارجہ کا ٹویٹ :

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ بھارت کو جان لینا چاہیے کہ ریاستی دہشت گردی اور مسلح افواج کے ذریعے ناجائز قبضے سے آزادی کی تحریک کو کچلا نہیں جا سکتا۔

اپنے ایک ٹویٹ میں وزیر خارجہ نے کہا ہے کہ برہان وانی شہید کی برسی پرپوری پاکستانی قوم انہیں خراج تحسین پیش کرتی ہے۔

بھارت کو جان لینا چاہیئے کہ ریاستی دہشت گردی،ظلم،بربریت اور مسلح افواج کے ذریعے ناجائز قبضے سے آزادی کی تحریک کو کچلا نہیں جا سکتا بلکہ اس کے نتیجے میں برہان وانی جیسے مزید بہادر کشمیری سپوتوں کا جنم ہوگا

دوسری جانب مقبوضہ وادی میں بھارتی فوج کا ظلم جاری ہے۔ غاصب فوج نے ضلع کلگام اور ضلع پلوامہ میں دو، دو اور ضلع کپواڑہ میں ایک کشمیری نوجوان کو شہید کر دیا۔ قابض فوج نے علاقے میں انٹرنیٹ اور موبائل سروس بند کر کے گھر گھر تلاشی بھی لی۔

بھارتی فوج نے حریت رہنما مشتاق السلام کو سری نگر کے علاقے بٹمالو میں ان کے گھر سے گرفتار کیا، انہیں نامعلوم مقام پر منتقل کر دیا گیا۔

 

پچھلا پڑھیں

ترک وزارت صحت کے وفد کا البانیہ کا دورہ

اگلا پڑھیں

سام سنگ کمپنی کا پاکستان میں مینوفیکچرنگ یونٹ قائم کرنے پر غور

تبصرہ شامل کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے