سعودی حکومت نے "میزبان عمرہ ویزہ” منصوبہ منسوح کر دیا

وزارت حج و عمرہ سعودی عرب نے اعلان کیا ہے کہ اس نےمجوزہ” میزبان عمرہ ویزہـ” کا منصوبہ منسوخ کر دیا ہے۔ اس پروگرام پر عمل درآمد نہیں کیا جائے گا۔
یہ بات وزارت حج و عمرہ کے ترجمان انجینیئر ھشام بن سعید نے اپنے میڈیا بیان میں بتائی ہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ وزارت حج نے تین سال قبل اعلان کیا تھا کہ میزبان عمرہ ویزہ منصوبہ شروع کیا جائے گا جس کے تحت کوئی بھی سعودی شہری یا مقیم غیرملکی تین سے پانچ افراد کو اپنی میزبانی میں عمرہ کرانا چاہے گا تو اسے ان کے لیے عمرہ ویزہ جاری کرانے کی سہولت دی جائے گی۔ وزارت اب اپنے اس پروگرام سے دستبردار ہو گئی ہے۔
وزارت حج و عمرہ نے مذکورہ پروگرام کو ’عمرہ المضیف‘ یعنی ’میزبان عمرہ ویزہ‘ کا نام دیا تھا۔ سعودی شہری عمرہ ویزہ جاری کرانے کے لیے قومی شناختی کارڈ اور مقیم غیرملکی اقامے کی بنیاد پر عمرہ ویزے جاری کرانے کا مجاز تھا۔
مقیم غیرملکی کے لیے شرط یہ رکھی گئی تھی کہ وہ اول درجے کے رشتہ داروںہی کو اپنی میزبانی میں عمرہ کرا سکتا ہے۔ جبکہ سعودی شہری پر یہ پابندی نہیں تھی، وہ کسی کو بھی اپنی میزبانی میں عمرہ کرانے کا مجاز بنایا گیا تھا۔ سال میں تین بار عمرہ ویزہ کے اجرا کی سہولت طے کی گئی تھی۔
مجوزہ میزبان عمرہ ویزے کے ذریعے آنے والوں کی ذمہ داری اس شخص پرعائد ہونا تھی جو انہیں ملک میں بلا رہا تھا۔

Read Previous

استنبول: یوکرین سے اناج کی عالمی منڈی میں ترسیل کے لیے مشترکہ رابطہ مرکز کا افتتاح

Read Next

پاکستان:لگثری اشیا ء کی درآمد پر عائد پابندی ختم کر دی گئی

Leave a Reply