fbpx
ozIstanbul

غزہ میں عید کے روز بھی اسرائیلی طیاروں کی بمباری ، جنازے اٹھتے رہے

Gaza Strip, Rafah: The father of the one and a half year old Razel Netzlream, carries her body right before funeral her in Rafah. Razem was killed during Israeli airstrike the night before. 7/18/2014 credit : ALESSIO ROMENZI instagram name

اسرائیل کی فوج کی طرف سے دہشتگردی کا سلسلہ جاری ، عید والے دن مزید فلسطینی شہید ہو گئے ہیں، شہداء کی تعداد 87 ہو گئی ہے،، شہید ہونے والوں میں 18 بچے ، 7 خواتین شامل ہیں. اب تک 7 اسرائیلی ہلاک ہو چکے ہیں،،

اسرائیلی جنگی طیاروں نے غزہ میں 6 منزلہ عمارت سمیت رہائشی عمارتوں پر بھی میزائل حملے کیے۔ جمعرات کی صبح جب فلسطینی شہری نماز عید کی ادائیگی کے لیے گھروں سے روانہ ہوئے تو آسمان پر صہیونی جنگی طیاروں کی گھن گرج سنائی دی اور سفاک دہشت گردوں نے نہتے لوگوں کو اپنے میزائلز کے نشانے پر رکھ لیا،،
غزہ میں فلسطینی حکام کے مطابق اب تک 87 افراد شہید ہوچکے ہیں جن میں 18 بچے شامل ہیں جبکہ 500 سے زائد افراد زخمی ہیں جن میں سے متعدد کی حالت تشویش ناک ہے اور شہدا کی تعداد میں اضافے کا خدشہ ہے۔ اس کے علاوہ گھر اور عمارتیں تباہ ہونے سے ہزاروں افراد بے گھر ہو چکے ہیں،،

فلسطینی ڈاکٹرز نے بتایا کہ اسرائیل کی جانب سے حملوں میں زہریلی گیس بھی استعمال کیے جانے کا شبہ ہے، شہدا کے جسد خاکی سے نمونے حاصل کر لیے گئے ہیں جن کا معائنہ جاری ،، اسکے باوجود آہوں اور سسکیوں میں سیکڑوں فلسطینیوں نے مسجد اقصیٰ کے احاطے میں نماز عید ادا کی،،۔

پچھلا پڑھیں

ایک فلسطینی بچے کو ملبے کے ڈھیر کی بجائے کمرہ جماعت میں بیٹھا ہونا چاہیے، ملالہ یوسف زئی

اگلا پڑھیں

آیا صوفیا میں 87 سال بعد نماز عید کی ادائیگی

تبصرہ شامل کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے